image
Sunday, Dec 8 2019 | Time 14:08 Hrs(IST)
  • اناج منڈی آگ حادثے کی عدالتی جانچ کا حکم
  • کانگریس نے اناج منڈی آتشزدگی کے لئے دہلی حکومت اور ایم سی ڈی کو ذمہ دار ٹھہرایا
  • مسابقتی دور طالب علموں سے سخت محنت، لگن اور جستجو کا تقاضہ کرتا ہے
  • اناج منڈی آگ حادثے میں مارے گئے لوگوں کو دو دو لاکھ کی امدادی رقم
  • کشمیر میں غیر یقینی صورتحال کا 126 واں دن، سنڈے مارکیٹ میں لوگوں کا بھاری رش
  • اناج منڈی آگ حادثے پر گہرا دکھ :پرینکا
  • شادی میں نوبیاہتا جوڑے کو پیاز کا تحفہ
  • عصمت دری کی کوشس کرنے والے دو نوجوان گرفتار
  • دیشا اپنے خاندان کے لئے بیٹے کی طرح تھی
  • جنوب کو توجہ نہ دینے والا میڈیا حیدرآباد واقعہ پر متوجہ:سرینواس یادو
  • اے پی میں سبسیڈی والی پانچ ٹن پیاز چار گھنٹے میں ختم
  • اناؤ متأثرہ :سخت سیکورٹی کے درمیان آخری رسوم کی ادائیگی
  • چھ سالہ بچی کے ساتھ نابالغ نے عصمت دری کی
  • ہرش وردھن نے اناج منڈی آتشزدگی پر افسوس ظاہر کیا
  • اناؤ متأثرہ:آخری رسوم کی اداگئی سے قبل یوگی کوبلانے پر بضد اہل خانہ
Entertainment » Bollywood

فاروق شیخ : متوازی فلموں کے ساتھ ساتھ کمرشیل فلموں میں مخصوص شناخت بنائی

فاروق شیخ : متوازی فلموں کے ساتھ ساتھ کمرشیل فلموں میں مخصوص شناخت بنائی

(25مارچ یوم پیدائش کے موقع پر خصوصی پیش کش)
نئی دہلی ، 24 مارچ (یواین آئی) بالی ووڈ میں فاروق شیخ ایک ایسےاداکارکےطور پر یاد کئے جاتے ہیں جنہوں نے ڈراموں اور متوازی سنیما کے ساتھ ساتھ پیشہ ورانہ سنیما میں بھی ناظرین کے درمیان اپنی مخصوص شناخت بنائی۔

فاروق شیخ کی پیدائش 25 مارچ 1948 کوگجرات کے شہر بدولی کے قریب ایک گاؤں نشوالی، امراہلی ضلع بڑودا میں ہوئی تھی۔
ان کے والد مصطفی شیخ ممبئی کے معروف وکیل تھے۔
فاررق شیخ پانچ بہن بھائیوں میں سب سے بڑے تھے۔

انہوں نے سینٹ میری اسکول، ممبئی سے تعلیم حاصل کرنے کے بعد سینٹ جیویر کالج، ممبئی اور پھر قانون کی سند سدھارتھ کالج سے حاصل کی۔
وہ کچھ دن اپنے والد کے ساتھ وکالت کرتے رہے۔
مگر وہ وکالت کے میدان میں کامیاب نہ ہوسکے ۔
فاروق شیخ نے قانون کے پیشے میں ناکام رہنے کے بعد تھیٹر کا رخ کیااور پونے فلم انسٹی ٹیوٹ میں داخلہ لے لیا۔
کالج کے دنوں میں وہ اداکاری اور اسٹیج ڈراموں میں حصہ لیتے تھے اور یہی پر ان کی ملاقات ان کی مستقبل کی شریک حیات روپا سے ہوئی۔
ان کی دو بیٹیاں ثناء شیخ اور شائستہ شیخ ہیں۔

وہ بہت شستہ اردو میں گفتگو کیا کرتے تھےاور ان کا طرز تحریربھی بہت خوب صورت تھا۔
کئی فلمی مکالمہ نگار، اپنی اسکرپٹ میں زبان و بیان کی اصلاح فاروق شیخ سے کرایا کرتے تھے۔
کلاسیکی اردو شاعری میں ان کا ذوق بہت اعلی تھا۔
اکثر ولی دکنی، غالب، میر، مومن، فیض، مخدوم محی الدین اور مجاز کے شعر گنگناتے تھے۔

70 کی دہائی میں بطور اداکار فلم انڈسٹری میں اپنی شناخت بنانے کے لئے فاروق شیخ ممبئی آئے۔
وہ یہاں تقریبا چھ سال تک جدوجہد کرتے رہے۔
انہیں یقین دہانی تو سبھی کراتے رہے ، لیکن کام کرنے کا موقع کوئی نہیں دیتا تھا۔
پھر فاروق شیخ کو 1973ء میں ہندوستان کی آزادی پر بننے والی فلم ’گرم ہوا‘ میں کام کرنے کا موقع ملا اور یہیں سے ان کے فلمی کیریئر کا آغاز ہوا۔
اس فلم میں کام کرنے کا معاوضہ انہیں 750 روپے ملا تھا۔
يوں تو پوری فلم اداکار بلراج ساہنی پر مبنی تھی لیکن اس فلم سے فاروق شیخ ناظرین کے درمیان کچھ حد تک اپنی پہچان بنانے میں کامیاب رہے۔

جاری۔
یو این آئی۔
شا پ

اکشے

اکشے اور سلمان کی فلمیں عید کے موقع پرباکس آفس پر آمنے سامنے

ممبئی، 4 دسمبر (یو این آئی) اکشے کمار اور سلمان خان کی فلمیں عید 2020 کے موقع پر باکس آفس پر ٹکرانے جارہی ہیں۔

رنویر

رنویر سنگھ نے سپر ہیروز پر مبنی فلم میں کام کرنے سےکیا انکار

ممبئی 24 نومبر (یو این آئی) بالی ووڈ اداکار رنویر سنگھ نے سپر ہیروز پر مبنی فلم میں کام کرنے سے انکار کر دیا ہے۔

جے

جے للتا کی بائیوپک کا پہلا ٹيجر ریلیز

ممبئی 24 نومبر (یو این آئی) بالی وڈ اداکارہ کنگنا رانوت کی آنے والی فلم 'تھلائوي' کا فرسٹ ٹيجر ریلیز ہو گیا ہے۔

ارجن

ارجن نے پانی پت کے لئے رنویر سے نہیں لی مدد

ممبئی 24 نومبر (یو این آئی) بالی ووڈ اداکار ارجن کپور کا کہنا ہے کہ انہوں نے فلم 'پانی پت' میں اپنے کردار کے لئے رنویر سنگھ سے کوئی مدد نہیں لی ہے۔

حقیقی

حقیقی زندگی میں بے حد خوش مزاج انسان ہیں رشی کپور: عمران ہاشمی

ممبئی، 21 نومبر (یو این آئی) بالی ووڈ اداکار عمران ہاشمی کا کہنا ہے کہ رشی کپور ریئل لائف میں غصہ ور نہیں بلکہ انتہائی خوش مزاج انسان ہیں۔

انٹرنیشنل

انٹرنیشنل فلم فیسٹیول میں دھرمیندر -راجیش کھنہ کی کلاسک فلمیں

ممبئی،14نومبر(یواین آئی)گوا میں ہونے والے انٹرنیشنل فلم فیسٹیول آف انڈیا (آئی ایف ایف آف انڈیا) میں دھرمیندر اور راجیش کھنہ کی کلاسک فلمیں دکھائی جائیں گی۔

غلام

غلام حیدر نے لتا کی صلاحیت کو پہچانا

(برسی 9 نومبر کے موقع پر)
ممبئی، 8 نومبر (یو این آئی) لتا منگیشکر کے فلمی کیرئر کے ابتدائی دور میں کئی ڈائریکٹر، پروڈیوسر اور موسیقاروں نے باریک آواز کی وجہ سے انہیں گانے کا موقع نہیں دیا لیکن اس وقت ایک موسیقار ایسے بھی تھے جنہیں لتا منگیشکر کی صلاحیت پر پورا عتماد تھا ۔

سنجیوکمار

سنجیوکمار ایک منفرد اداکار کے طور پر پہچانے جاتے تھے

(6نومبر برسی کے موقع پر)
ممبئی،5 نومبر (یو این آئی) گرودت کی بے وقت موت کے بعد ڈائریکٹر کے آصف نے اپنی فلم ’’لو اینڈ گاڈ‘‘ کی تخلیق کا کام بند کر دیا اور اپنی نئی فلم ’’سستا خون مہنگا پانی ‘‘كی پروڈکشن میں لگ گئے ۔

ہندی

ہندی فلم انڈسٹری کے عظیم فلمسازبی آر چوپڑہ

(5 نومبر برسی کے موقع پر)
ممبئی، 4 نومبر (یو این آئی) ہندستانی فلم انڈسٹری میں بی آر چوپڑا کو ایک ایسے فلمساز کے طور پر یاد کیا جائے گا جنہوں نے خاندانی، سماجی اور صاف ستھری فلمیں بناکر تقریباً پانچ دہائیوں تک فلم شائقین کے دلوں میں اپنی پہچان بنائے رکھی۔

کلاسیکی

کلاسیکی موسیقی کومنا ڈے نے فلمی دنیامیں ایک اعلی مقام پر پہنچایا

ممبئی، 23 اکتوبر (یواین آئی) ہندوستانی سنیما کی دنیا میں منا ڈے کو ایک ایسے گلوکار کے طور پر یاد کیا جاتا ہے جنہوں نے اپنی لاجواب پلے بیک گلوکاری کے ذریعے کلاسیکی موسیقی کو مخصوص شناخت دلائی۔

کامیڈی کنگ  کہے جانے والے محمود کو بھی کرنی پڑی جدوجہد

کامیڈی کنگ کہے جانے والے محمود کو بھی کرنی پڑی جدوجہد

ممبئی، 28 ستمبر (یو این آئی) اپنے مخصوص انداز، اسٹائل اورمزاحیہ آواز سے تقریباً پانچ دہائیوں تک ہنسانے اور گدگدانے والےمحمود نے فلم انڈسٹری میں کنگ آف کامیڈی کا درجہ حاصل کیا لیکن انہیں اس کے لئے کافی مشقت کرنا پڑی اوریہاں تک سننا پڑا کہ نہ تو وہ اداکاری کرسکتے ہیں اور نہ ہی کبھی اداکار بن سکتے ہیں۔

بھارت رتن شہنائی نواز استاد بسم اللہ خان

بھارت رتن شہنائی نواز استاد بسم اللہ خان

نئی دہلی، 20 اگست (یو این آئی) دُنیا بھر میں شہنائی کو شناخت دلانےاور اسے خاص و عام میں مقبول بنانے والے معروف شہنائی نواز استاد بسم اللہ خان کی پیدائش21 مارچ 1916 کو بہار کے گاؤں (دمراؤں) ضلع بکسر کے پیغمبربخش اور والدہ مٹھاں کے گھر ہوئی تھی۔ بسم اللہ خان کے آباؤ اجداد بھوج پور ضلع بہار کے شاہی دربار میں نقار خانہ میں ملازم بھی تھے۔ان کے والد پیغمبر بخش خان مہاراجہ جودھ پور کے دربار میں شہنائی نواز تھے۔اس سے پہلے ان کےپردادا استاد سالار حسین خان اور دادا رسول بخش خان بھی دمراؤں کے شاہی دربار میں گاتےتھے۔ ماں باپ نے اُن کانام امیرالدین خان رکھا تھا لیکن دادا نے امیرخان کو بسم اللہ میں بدل دیا اور ہاتھ میں شہنائی تھما دی۔ چونکہ موسیقی انہیں میراث میں ملی تھی اسی لیے بچپن سے ہی موسیقی میں دلچسپی رکھنے والے بسم اللہ خان نے اپنے ماموں علی بحش سےشہنائی نوازی کی تعلیم حاصل کی اور پھر بعد میں بسم اللہ خان انہی کے ساتھ کاشی کے وشوناتھ مندر میں شہنائی بجانےلگے۔چار یا پانچ برس کی عمر میں بنارس آ گئے تھے۔

زی ٹی وی پر انگوری بھابھی اور گڈن کے ذریعہ کرکرے نے نئی سوچ کا جشن منایا

زی ٹی وی پر انگوری بھابھی اور گڈن کے ذریعہ کرکرے نے نئی سوچ کا جشن منایا

نئی دہلی، 15مئی(یو این آئی)رواں ماہ مئی میں کئی کردار جن میں گڈن تم سے نہ ہوپائے گا-کہ گڈن، بھابھی جی گھر پر ہیں کہ انگوری اور ہپو کی الٹن پلٹن کے راجیش اور کچھ دیگر کردار انتہائی دلچسپ کردار میں نظر آئیں گے جہاں وہ اپنے کنبوں کو دلچسپ انداز میں جدید سوچ کی طرف مائل کریں گے۔

image