image
Friday, Nov 15 2019 | Time 20:58 Hrs(IST)
  • رافیل سودے پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد راہل اور گانگریس کو معافی مانگنی چاہئے : شہنواز حسین
  • برلا نے ہفتہ کو کل جماعتی میٹنگ بلائی
  • سی آر پی ایف نکسلیوں کے خلاف فیصلہ کن مہم چلائے : امت شاہ
  • مغربی مدنی پور میں بی جے پی ورکر کی لاش درخت سے لٹکی ہوئی برآمد
  • دو معاملوں میں رکن اسمبلی اننت سنگھ کے خلاف پیشی وارنٹ
  • خصوصی مہم میں تین خونخوار سمیت 97 بدمعاش گرفتار
  • شیوسینا،کانگریس ،این سی پی کے درمیان یکساں قلیل ترین معاہدہ طے،حکومت سازی کی کوشش جلد
  • پاکوڑ میں مختلف گاڑیوں سے پانچ لاکھ سے ز ائد نقدضبط
  • تیراکی: انگلش چینل تیر کر پار کرنے والے پہلے ہندوستانی تھے مہر سین
  • شیو کمار کی ضمانت کے خلاف ای ڈی کی اپیل مسترد
  • بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ ہماری سمجھ سے بالاتر:مولاناارشد مدنی
National

بابری مسجد غیر قانونی طور پر منہدم کی گئی تھی: سپریم کورٹ

بابری مسجد غیر قانونی طور پر منہدم کی گئی تھی: سپریم کورٹ

نئی دہلی، 9 نومبر (یو این آئی) سپریم کورٹ نے اجودھیا اراضی تنازع کے معاملے میں ہفتہ کے روز اپنا تاریخی فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ 6 دسمبر 1992 کو بابری مسجد کا انہدام ’غیر قانونی‘ تھا اور اس طرح کا واقعہ سیکولر ملک میں نہیں ہونا چاہئے تھا۔
عدالت نے اسی بنیاد پر مسلم فریقوں کو اجودھیا میں پانچ ایکڑ اراضی مسجد کی تعمیر کے لئےدینے کا حکم دیا ہے۔
چیف جسٹس رنجن گگوئی کی سربراہی میں آئینی بینچ نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ یہ عدالت کی ذمہ داری ہے کہ وہ آئین کی شق 142 کے تحت اپنے اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے سابقہ میں کی گئی غلطیوں کی اصلاح کرے۔ اگر عدالت مسلم کمیونٹی کی اہلیت کو نظرانداز کرے گی تو یہ انصاف نہیں ہوگا ، جنھیں قانون کی پابند سیکولر ملک میں ناجائز طریقے سے ان کی مسجد کے ڈھانچے سے محروم کردیا گیا تھا ۔
آئینی بنچ نے مزید کہا کہ ....ان کی عبادت کے مقام کو غیر قانونی طریقے سے منہدم کرنے کے لئے مسلم فریق کی تلافی ضروری جائے۔ مسلمانوں کو دی جانے والی راحت کی نوعیت کا جائزہ لینے کے بعد ، ہم سنی سنٹرل وقف بورڈ کو پانچ ایکڑ اراضی الاٹ کرنے کا حکم دیتے ہیں۔ یہ زمین مرکزی حکومت کے زیر قبضہ اراضی یا اترپردیش کی ریاستی حکومت سے ایودھیا شہر کے حدود میں دی جاسکتی ہے۔
یو این آئی۔ ع ا۔

خاص خبریں
سی آر پی ایف نکسلیوں کے خلاف فیصلہ کن مہم چلائے : امت شاہ

سی آر پی ایف نکسلیوں کے خلاف فیصلہ کن مہم چلائے : امت شاہ

نئی دہلی 15 نومبر (یواین آئی) مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے سی آر پی ایف سے بائیں بازو کے انتہا پسندی کے خلاف اگلے چھ مہینے میں مؤثر اور فیصلہ کن مہم چلانے کے لئے کہا ہے۔

...مزید دیکھیں
ہائی کورٹ نے چدمبرم کی ضمانت کی عرضی مسترد کردی

ہائی کورٹ نے چدمبرم کی ضمانت کی عرضی مسترد کردی

نئی دہلی ، 15 نومبر (یو این آئی) دہلی ہائی کورٹ نے آئی این ایکس میڈیا سے متعلق بے ضابطگیوں کے معاملے میں تہاڑ جیل میں بند سابق مرکزی وزیر اور کانگریس کے رہنما پی چدمبرم کی درخواست ضمانت جمعہ کو خارج کردی۔

...مزید دیکھیں
بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ ہماری سمجھ سے بالاتر:مولاناارشد مدنی

بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ ہماری سمجھ سے بالاتر:مولاناارشد مدنی

نئی دہلی،15نومبر(یو این آئی) بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ کوسمجھ سے بالاتر قرار دیتے ہوئے جمعیۃعلماء ہند کے صدر مولانا ارشدمدنی نے بابری مسجد قانون اور عدل وانصاف کی نظرمیں ایک مسجد تھی اور آج بھی شرعی لحاظ سے مسجد ہے اور قیامت تک مسجد ہی رہے گی، چاہے اسے کوئی بھی شکل اور نام دیدیا جائے۔

...مزید دیکھیں
وزیر دفاع نے بملا میں اگلی فوجی چوکیوں کا دورہ کیا

وزیر دفاع نے بملا میں اگلی فوجی چوکیوں کا دورہ کیا

ایٹا نگر، 15نومبر (یو این آئی) اروناچل پردیش کے دو دنوں کے دورہ پر آئے وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے جمعہ کو ہند۔

...مزید دیکھیں
آلودگی معاملے میں چار ریاستوں کے چیف سکریٹری  سپریم کورٹ میں طلب

آلودگی معاملے میں چار ریاستوں کے چیف سکریٹری سپریم کورٹ میں طلب

نئی دہلی ، 15 نومبر (یو این آئی) آلودگی روکنے میں ناکامی پر سپریم کورٹ نے پنجاب ، ہریانہ ، اتر پردیش اور دہلی کے چیف سکریٹریوں کو جمعہ کو طلب کیا۔

...مزید دیکھیں
وزیر اعظم نے اجودھیا فیصلے پر جسٹس گوگوئی کو کوئی  خط نہیں لکھا: حکومت

وزیر اعظم نے اجودھیا فیصلے پر جسٹس گوگوئی کو کوئی خط نہیں لکھا: حکومت

نئی دہلی، 15 نومبر (یو این آئی) حکومت نے آج واضح کیا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے اجودھیا میں رام مندر سے متعلق معاملے میں فیصلے کے بعد سپریم کورٹ کے چیف جسٹس جسٹس رنجن گوگوئی کو کوئی خط نہیں لکھا۔

...مزید دیکھیں
شیوکمار کی ضمانت کے خلاف ای ڈی کی اپیل خارج

شیوکمار کی ضمانت کے خلاف ای ڈی کی اپیل خارج

نئی دہلی،15نومبر(یواین آئی)سپریم کورٹ نے منی لانڈرنگ معاملے میں کانگریس لیڈر ڈی کے شیوکمار کو ضمانت دئےجانے کے خلاف انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی)کی اپیل جمعہ کو خارج کردی۔

...مزید دیکھیں
image