image
Friday, Apr 10 2020 | Time 04:44 Hrs(IST)
National

شاہین باغ مظاہرہ: حکومت، عدلیہ کو روڈ کی فکر ہے لیکن سڑک پر بیٹھنے والی خواتین کی نہیں

شاہین باغ مظاہرہ: حکومت، عدلیہ کو روڈ کی فکر ہے لیکن سڑک پر بیٹھنے والی خواتین کی نہیں

نئی دہلی، 18 فروری (یو این آئی,عابد انور) قومی شہریت (ترمیمی)قانون، این آر سی اور این پی آر کے خلاف شاہین باغ میں خاتون مظاہرین نے سڑک بند ہونے پر واویلا مچانے والوں سے کہا کہ، حکومت، عدلیہ اور کچھ خاص طبقوں کو سڑک بند ہونے کی بہت فکر ہے لیکن ان خواتین کی فکر نہیں ہے جو زائد از دو ماہ سے شاہین باغ سمیت ملک بھر میں سڑکوں پر ہے۔
شاہین باغ خاتون مظاہرین نے کہا ایک سڑک بند ہونے کی وجہ سے آسمان سر پر اٹھالیا گیا ہے جب کہ دہلی میں روزانہ کئی سڑکیں کسی نہ کسی وجہ سے بند ہوتی ہیں اور لوگوں کے کئی گھنٹے برباد ہوتے ہیں لیکن اس پر کوئی بات نہیں کی جاتی۔ شاہین باغ روڈ کے سلسلے میں نہ صرف پورے شاہین باغ کو نشانہ بنایا جارہا ہے بلکہ اسے بدنام کرنے کے لئے طرح طرح کے ہتھکنڈے اپنائے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اس کے لئے اگر کوئی ذمہ دار ہے تو اور حکومت اور انتظامیہ ہے کیوں کہ اب تک اس نے ہماری بات نہیں سنی ہے۔
مظاہرین میں شامل ریتو کوشک نے حکومت کی بے حسی پر افسوس کا اظہا ر کرتے ہوئے کہاکہ کوئی بھی حکومت عوام کے لئے ہوتی ہے، اسے عوام کی تکلیف، دکھ، درد اور پریشانیوں کو دو رکرنا چاہئے لیکن یہ حکومت ضد پر اڑی ہوئی ہے اور حکومت نے ہمیں کیڑے مکوڑے سمجھ لیا ہے اس لئے ہمارے دکھ درد کا اسے احساس نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ عوام نے حکومت بنائی ہے نہ کہ حکومت نے عوام کو بنایا ہے۔ انہوں نے کہاکہ احتجاج کا اختیار ہمیں آئین نے دیا ہے نہ کہ حکومت نے، اور جس آئین نے حکومت کو اختیار دیا ہے وہی آئین ہمیں احتجاج کرنے کا بھی حق دیا ہے اور حکومت کو ہماری بات سننی ہی پڑے گی۔
انہوں نے کہاکہ قانون عوام کے لئے ہوتا ہے نہ کہ عوام قانون کے لئے۔ اسی لئے حکومت کو کوئی ایسا قانون نہیں بنانا چاہئے جس سے عوام کو کوئی تکلیف پہنچے۔ وزیر اعظم مسٹر مودی کے بنارس والے بیان پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے محترمہ کوشک نے کہاکہ وہ اگر اس کالا قانون کو واپس نہیں لیں گے تو ہم بھی اپنا دھرنا جاری رکھیں گے اور پورے ملک کی خواتین کو جمع کریں گے۔انہوں نے کہاکہ اس قانون کے خلاف اس وقت پورا ملک شاہین باغ بن چکا ہے اور اگر حکومت نے اسے واپس نہیں لیا تو اس میں بہت شدت آئے گی۔
مظاہرین میں شامل انیتا باگ، روربی، شاہین اقراء اور رضیہ سلطان نے اسی طرح کے جذبات کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ مجھے امید ہے کہ عدالت ہمارے ساتھ انصاف کرے گی اور اس قانون کو رد کردے گی۔ انہوں نے کہاکہ اگر عوام کو عدالت سے انصاف نہیں ملے گا تو پھر عوام عدالت کیوں جائیں گے۔
مہاراشٹر کے ناگپور سے آنے والے شیخ تحسین، روزینہ پروین، شیخ یوسف اور حنیف پٹیل نے بتایا کہ وہ چھٹی لیکر شاہین باغ خاتون مظاہرین کی حمایت کرنے آئے ہیں۔ اس وقت تک دھرنا میں شریک رہیں گے جب تک حکومت اسے واپس نہیں لے لیتی۔ انہوں نے کہاکہ شاہین باغ کی طرح پورے مہاراشٹر میں سی اے اے کے خلاف مرد و خواتین کا احتجاج جاری ہے اور ناگپور میں چھ جگہ مظاہرے ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ناگپور میں پیلی ندی، کیکا، باباصاحب امبیڈکر چو ک وغیرہ میں مظاہرے ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ یہ ہمارے آئین کے خلاف ہے اس لئے ہم اس کی حمایت کررہے ہیں۔
خاتون مظاہرین میں شامل ملکہ خاں، نصرت آراء، محترمہ شیزہ وغیرہ نے کہاکہ مذاکرات کار کو ہم اپنی تکلیف بتائیں گے ہم لوگ یہاں کوئی شوق سے دھرنے پر نہیں بیٹھی ہیں بلکہ ہم تکلیف میں ہیں، ہمارا مستقبل تاریک ہونے والا ہے اور عدالت دستور کے خلاف اس قانون کو جلد از جلد رد کرے۔ تاکہ دھرنا ختم ہوجائے۔
اس کے علاوہ جامعہ ملیہ اسلامیہ میں قومی شہریت (ترمیمی)قانون، این آر سی اور این پی آر کے خلاف طلبہ اور عام شہری احتجاج کررہے ہیں جامعہ کوآرڈی نیشن کمیٹی نے پولیس بربریت کا ایک ویڈیو جاری کیا ہے۔ اس کے علاوہ دقومی شہریت (ترمیمی) قانون، این آر سی اور این پی آر کے خلاف دہلی میں ہی درجنوں جگہ پر خواتین مظاہرہ کر رہی ہیں۔ نظام الدین میں شیو مندر کے پاس خواتین کامظاہرہ جوش و خروش کے ساتھ جاری ہے۔تغلق آباد میں خاتون نے مظاہرہ کرنے کی کوشش کی تھی لیکن پولیس نے طاقت کا استعمال کرتے ہوئے ان لوگوں کو وہاں سے بھگادیا۔
شاہین باغ کے بعد خوریجی خواتین مظاہرین کا اہم مقام ہے۔خوریجی خاتون مظاہرین کا انتظام دیکھنے والی سماجی کارکن اور ایڈووکیٹ اور سابق کونسلر عشرت جہاں نے بتایا کہ مظاہرین نے بتایا کہ یہاں پرامن طریقے سے خواتین کا احتجاج جاری ہے۔اسی کے ساتھ اس وقت دہلی میں حوض رانی، گاندھی پارک مالویہ نگر‘ سیلم پور جعفرآباد، ترکمان گیٹ،بلی ماران، کھجوری، اندر لوک، شاہی عیدگاہ قریش نگر، مصطفی آباد، کردم پوری، نور الہی کالونی، شاشتری پارک،بیری والا باغ، نظام الدین،جامع مسجدسمیت دیگر جگہ پر مظاہرے ہورہے ہیں۔اس کے علاوہ چننئی میں سی اے اے کے خلاف مظاہرہ کرنے والوں میں سے ایک کے مرنے کی خبر ہے۔ اس کے باوجود مظاہر ہ جاری ہے۔
اس کے علاوہ راجستھان کے بھیلواڑہ کے گلن گری، کوٹہ، رام نواس باغ جے پور، جودھ پور’اودن پور اور دیگر مقامات پر خواتین کے مظاہرے ہورہے ہیں۔اسی طرح مدھیہ پردیش کے اندورمیں کئی جگہ مظاہرے ہور ہے ہیں۔ اندور میں کنور منڈلی میں خواتین کا زبردست مظاہرہ ہورہا ہے۔ وہاں کے منتظم نے بتایا کہ اس سیاہ قانون کے تئیں یہاں کی خواتین کافی بیدار ہیں۔ یہاں پر بھی مختلف شعبہائے سے وابستہ افراد یہاں آرہے ہیں اور قومی شہریت (ترمیمی)قانون، این آر سی اور این پی آر کے خلاف اپنی آواز بلند کر رہے ہیں۔ اندور کے علاوہ مدھیہ پردیش کے بھوپال،اجین، دیواس، مندسور، کھنڈوا، جبل پور اور دیگر مقامات پر بھی خواتین کے مظاہرے ہورہے ہیں۔
اترپردیش قومی شہریت(ترمیمی) قانون، این آر سی، این پی آر کے خلاف مظاہرہ کرنے والوں کے لئے سب سے مخدوش جگہ بن کر ابھری ہے جہاں بھی خواتین مظاہرہ کرنے کی کوشش کر رہی ہیں وہاں پولیس طاقت کا استعمال کرتے ہوئے انہیں ہٹادیا جاتا ہے۔ وہاں 19دسمبر کے مظاہرہ کے دوران 22لوگوں کی ہلاکت ہوچکی ہے۔بلیریا گنج (اعظم گڑھ) میں پرامن طریقے سے دھرنا دینے والی 20سے زائد خواتین پر ملک سے غداری سمیت کئی دفعات کے تحت مقدمات درج کئے گئے ہیں جس میں ایک نابالغ بھی شامل ہے۔ خواتین گھنٹہ گھر میں مظاہرہ کر رہی ہیں ور ہزاروں کی تعداد میں خواتین نے اپنی موجودگی درج کروارہی ہیں۔ اترپردیش میں سب سے پہلے الہ آباد میں چند خواتین نے احتجاج شروع کیا تھااب ہزاروں میں ہیں۔خواتین نے روشن باغ کے منصور علی پارک میں مورچہ سنبھالا۔ اس کے بعد کانپور کے چمن گنج میں محمد علی پارک میں خواتین مظاہرہ کررہی ہیں۔ اترپردیش کے ہی سنبھل میں پکا باغ، دیوبند عیدگاہ،سہارنپور، مبارک پور اعظم گڑھ،اسلامیہ انٹر کالج بریلی، شاہ جمال علی گڑھ، اور اترپردیش کے دیگر مقامات پر خواتین مظاہرہ کر رہی ہیں۔
شاہین باغ دہلی کے بعد سب سے زیادہ مظاہرے بہار میں ہورہے ہیں اور وہاں دلت، قبائلی سمیت ہندوؤں کی بڑی تعداد مظاہرے اور احتجاج میں شامل ہورہی ہے۔ ارریہ فاربس گنج کے دربھنگیہ ٹولہ عالم ٹولہ، جوگبنی میں خواتین مسلسل دھرنا دے رہی ہیں ایک دن کے لئے جگہ جگہ خواتین جمع ہوکر مظاہرہ کر رہی ہیں۔ اسی کے ساتھ مردوں کا مظاہرہ بھی مسلسل ہورہا ہے۔ کبیر پور بھاگلپور۔ گیا کے شانتی باغ میں گزشتہ 29دسمبر سے خواتین مظاہرہ کر رہی ہیں اس طرح یہ ملک کا تیسرا شاہین باغ ہے، دوسرا شاہین باغ خوریجی ہے۔سبزی باغ پٹنہ میں خواتین مسلسل مظاہرہ کر رہی ہیں۔ پٹنہ میں ہی ہارون نگر میں خواتین کا مظاہرہ جاری ہے۔ اس کے علاوہ بہار کے نرکٹیا گنج، مونگیر، مظفرپور، دربھنگہ، مدھوبنی، ارریہ کے مولوی ٹولہ،سیوان، چھپرہ، بہار شریف، جہاں آباد،گوپال گنج، بھینساسر نالندہ، موگلاھار نوادہ، مغربی چمپارن، بیتیا، سمستی پور، تاج پور، کشن گنج کے چوڑی پٹی، بیگوسرائے کے لکھمنیا علاقے میں زبردست مظاہرے ہو ہے ہیں۔ بہار کے ہی ضلع سہرسہ کے سمری بختیارپورسب ڈویزن کے رانی باغ میں خواتین کا بڑا مظاہرہ ہورہا ہے۔
مہاراشٹر کے سلوڑ میں 13 فروری سے خواتین کا مظاہرہ شروع ہوا ہے۔ جس کو خطاب کرنے کے لئے مرکزی وزیر راؤ صاحب پاٹل موجود تھے۔ انہوں نے کہاتھاکہ حکومت جلد ہی اس بارے میں فیصلہ کرے گی۔ شاید یہ پہلا مظاہرہ ہے جس سے کسی مرکزی وزیر نے خطاب کیا ہے۔مہاراشٹر کے ناگپور میں چھ جگہوں پر مظاہرہ جاری ہے۔
شاہین باغ،دہلی، جامعہ ملیہ اسلامیہ،دہلی،آرام پارک خوریجی،حضرت نظام الدین، قریش نگر عیدگاہ، اندر لوک، نورالہی دہلی ’۔سیلم پور فروٹ مارکیٹ،دہلی،۔جامع مسجد، دہلی،ترکمان گیٹ، دہلی،ترکمان گیٹ دہلی، بلی ماران دہلی، شاشتری پارک دہلی، کردم پوری دہلی، مصطفی آباد دہلی، کھجوری، بیری والا باغ، شا،رانی باغ سمری بختیارپورضلع سہرسہ بہار،سبزی باغ پٹنہ،، ہارون نگر،پٹنہ’شانتی باغ گیا بہار، مظفرپور، ارریہ سیمانچل بہار،بیگوسرائے بہار،پکڑی برواں نوادہ بہار،مزار چوک،چوڑی پٹی کشن گنج‘ بہار،مگلا کھار‘ انصارنگر نوادہ بہار،مغربی چمپارن، مشرقی چمپارن، دربھنگہ میں تین جگہ، مدھوبنی،سیتامڑھی، سمستی پور‘ تاج پور، سیوان،گوپال گنج،کلکٹریٹ بتیا‘ہردیا چوک دیوراج، نرکٹیاگنج، رکسول، کبیر نگر بھاگلپور، رفیع گنج، مہارشٹر میں دھولیہ، ناندیڑ، ہنگولی،پرمانی، آکولہ، پوسد،کونڈوا،۔پونہ،ستیہ نند ہاسپٹل، مالیگاؤں‘ جلگاؤں، نانڈیڑ، پونے، شولاپور، اور ممبئی میں مختلف مقامات، مغربی بنگال میں پارک سرکس کلکتہ‘ مٹیا برج، فیل خانہ، قاضی نذرل باغ، اسلام پور، مرشدآباد، مالدہ، شمالی دیناجپور، بیربھوم، داراجلنگ، پرولیا۔ علی پور دوار،اسلامیہ میدان الہ آبادیوپی،روشن باغ منصور علی پارک الہ آباد یوپی۔محمد علی پارک چمن گنج کانپوریوپی، گھنٹہ گھر لکھنو یوپی، البرٹ ہال رام نیواس باغ جئے پور راجستھان،کوٹہ، اودے پور، جودھپور، راجستھان،اقبال میدان بھوپال مدھیہ پردیش، جامع مسجد گراونڈ اندور،مانک باغ اندور، اجین،دیواس، کھنڈوہ،مندسور‘ احمد آباد گجرات، بنگلور، منگلور، شاہ گارڈن، میسور، پیربنگالی گرؤنڈ، یادگیر کرناٹک، آسام کے گوہاٹی، تین سکھیا۔ ڈبرو گڑھ، آمن گاؤں کامروپ۔ کریم گنج، تلنگانہ میں حیدرآباد، نظام آباد‘ عادل آباد۔ آصف آباد، شمس آباد، وقارآباد، محبوب آباد، محبوب نگر، کریم نگر، آندھرا پردیش میں وشاکھا پٹنم‘ اننت پور،سریکاکولم‘ کیرالہ میں کالی کٹ، ایرناکولم، اویڈوکی،، ہریانہ کے میوات اور یمنانگرفتح آباد،فریدآباد، اس کے علاوہ دیگر مقامات پر بھی دھرنا جاری ہے۔ اسی کے ساتھ جارکھنڈ کے رانچی، کڈرو،لوہر دگا، بوکارو اسٹیل سٹی، دھنباد کے واسع پور، جمشید پور وغیرہ میں بھی خواتین مظاہرہ کررہی ہیں۔
یو این آئی۔ ع ا۔

خاص خبریں
کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے 15000 کروڑ روپے کی   منظوری

کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے 15000 کروڑ روپے کی منظوری

نئی دہلی، 9 اپریل ( یواین آئی ) ملک میں کورونا وائرس (كووڈ -19) سے متاثرہ افراد کی تعداد بڑھ کر 5865 اور اس کی وجہ سے 169 افراد کے ہلاک ہونے کے ساتھ ہی مرکزی حکومت نے اس وبا سے نمٹنے کے لئے قومی اور ریاستی سطح پر طبی نظام کو مضبوط بنانے کے مقصد سے 15000 کروڑ روپے کی رقم منظور کی ہے ۔

...مزید دیکھیں
ملک میں کورونا  وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد  5865، 169ہلاکتیں

ملک میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 5865، 169ہلاکتیں

نئی دہلی، 9 اپریل ( یواین آئی ) ملک میں کورونا وائرس (كووڈ -19) سے متاثرہ افراد کی تعداد بڑھ کر 5965 ہو گئی ہے اور اس کی وجہ سے ہلاک شدگان کی تعداد 169 تک پہنچ گئی اور اب تک 478 افراد کو صحت یاب ہونے کے بعد اسپتال سے فارغ کر دیا ہے ۔

...مزید دیکھیں
مودی نے جمہوریہ کوریاکے صدر مون جائی ان سے بات کی

مودی نے جمہوریہ کوریاکے صدر مون جائی ان سے بات کی

نئی دہلی،9؍اپریل (یواین آئی) وزیراعظم نریندر مودی نے آج جمہوریہ کوریا کے صدر مون جائی-ان کے ساتھ ٹیلی فون پر بات چیت کی اور کورونا وبا سے پیدا ہوئی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔

...مزید دیکھیں
سونیا کی میڈیا کے اشتہارات روکنے   کے مشورہ  کی مخالفت میں اتری صحافیوں  تنظیمیں

سونیا کی میڈیا کے اشتہارات روکنے کے مشورہ کی مخالفت میں اتری صحافیوں تنظیمیں

نئی دہلی / حیدرآباد، 9 اپریل ( یواین آئی ) صحافیوں کی قومی تنظیموں نے کانگریس صدر سونیا گاندھی کے وزیر اعظم نریندر مودی کو د یے گئے اس مشورہ پر عدم اطمینان ظاہر کیا ہے جس میں انہوں نے كورونا وائرس ’ كووڈ -19‘ سے لڑنے کے لئے مناسب فنڈ بچانے کے واسطے میڈیا کو فراہم کئے جانے والے اشتہارات پر روک لگانے کی درخواست کی تھی ۔

...مزید دیکھیں
دہلی میں کورونا وائرس  سے 669 افرادمتاثر،9افراد ہلاک

دہلی میں کورونا وائرس سے 669 افرادمتاثر،9افراد ہلاک

نئی دہلی،9 اپریل (یواین آئی) دہلی میں كورونا وائرس متاثرین کی تعداد 669 جبکہ نوافراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

...مزید دیکھیں
کووند، مودی اور شاہ  نے  سی آر پی ایف کو ’شوریہ دیوس‘ پر  مبارک باد دیا

کووند، مودی اور شاہ نے سی آر پی ایف کو ’شوریہ دیوس‘ پر مبارک باد دیا

نئی دہلی، 09 اپریل (یواین آئی) صدررام ناتھ کووند،وزیراعظم نریندر مودی اور وزیرداخلہ امیت شاہ نے ملک کے سب سے بڑے نیم فوجی فورس سینٹرل ریزرو پولس فورس (سی آر پی ایف) کو ’شوریہ دیوس‘ پر مبارک باد دیا ہے۔

...مزید دیکھیں
نشنک نے   نیشنل ٹیسٹنگ   ایجنسی  کو  مکتوب ارسال  کیا

نشنک نے نیشنل ٹیسٹنگ ایجنسی کو مکتوب ارسال کیا

نئی دہلی، 9 اپریل ( یواین آئی ) مرکزی وزیر برائے فارغ انسانی وسائل رمیش پوکھریال نشنک نے لاکھوں طلباء کی سہولت کو مدنظر رکھتے ہوئے نیشنل ٹیسٹنگ ایجنسی ( این ٹی اے ) کو جے ای ای (مین) 2020 کے امتحان مراکز کو تبدیل کرنے کی تاریخ آگے بڑھانے کے لئے مکتوب ارسال کیا اور ایجنسی کے ڈائریکٹر جنرل کو طلباء کی رہنمائی کرنے کو کہا ۔

...مزید دیکھیں
کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے 15000 کروڑ روپے کی   منظوری

کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے 15000 کروڑ روپے کی منظوری

09 Apr 2020 | 11:43 PM

نئی دہلی، 9 اپریل ( یواین آئی ) ملک میں کورونا وائرس (كووڈ -19) سے متاثرہ افراد کی تعداد بڑھ کر 5865 اور اس کی وجہ سے 169 افراد کے ہلاک ہونے کے ساتھ ہی مرکزی حکومت نے اس وبا سے نمٹنے کے لئے قومی اور ریاستی سطح پر طبی نظام کو مضبوط بنانے کے مقصد سے 15000 کروڑ روپے کی رقم منظور کی ہے ۔مرکزی وزارت برائے صحت اور خاندانی بہبود نے ریاستوں کو ارسال کئے گئے مکتوب میں کہا ہے کہ ’ كووڈ -19 ایمرجنسی رسپانس اینڈ ہیلتھ سسٹم پری پیئرڈ نس پیکج‘ کا مقصد ملک بھر میں کورونا وائرس کی تشخیص اور علاج و معالجہ کی سہولیا ت کو بڑھانا ہے ۔ اس کے تحت لازمی طبی آلات اور ادویات کی خریداری، لیبارٹری بنانا، نگرانی بڑھانا اور وسیع پیمانے پرطبی نظام کو مضبوط بنانا شامل ہے ۔ وزارتی گروپ نے اعلی سطحی میٹنگ کر کے صورتحال کا جائزہ لیا اور کورونا کی روک تھام ، انتظامات اور کورونا وائرس کے علاج کے لئے مقرر اسپتالوں کے قیام پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔

کورونا کے سبب بنگلہ دیش-آسٹریلیا ٹیسٹ سیریز ملتوی

کورونا کے سبب بنگلہ دیش-آسٹریلیا ٹیسٹ سیریز ملتوی

09 Apr 2020 | 8:11 PM

ڈھاکہ، 09 اپریل (یو این آئی ) دنیا بھر میں پھیلے مہلک کورونا وائرس 'كووڈ 19' کے قہر کی وجہ سے آسٹریلیا اور بنگلہ دیش کرکٹ بورڈز نے اس سال جون میں ہونے والی دونوں ممالک کی ٹیسٹ سیریز کو باہمی رضامندی کے بعد ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مسک کلی گانے کے ریمیک سے خوش  نہیں ہیں رحمان

مسک کلی گانے کے ریمیک سے خوش نہیں ہیں رحمان

09 Apr 2020 | 1:09 PM

ممبئی، 9 اپریل (یو این آئی) بالی ووڈ کے جانے مانے موسیقار اور گلوکار اے آر رحمان مسک کلی گانے کے ری میک سے خوش نہیں ہیں۔ مسک کلی گانے کو اے آر رحمان نے کمپوز کیا تھا اور موہت چوہان نے اس نغمے کو اپنی آواز دی تھی۔ فلم دلی-6 کے اس گانے کو ابھشیک بچن اور سونم کپور پر فلمایا گیا تھا۔

9اولمپک کوٹہ کے ساتھ ہندوستان کا بہترین کارکردگی

11 Mar 2020 | 7:15 PM

عمان،11مارچ(یواین آئی)عالمی چیمپین شپ میں کانسے کاتمغے جیتنے والے منیش کوشک (63کلوگرام)کے بدھ کو ایشیا/اوسنیا اولمپک کوالیفائر مکے بازی ٹورنامنٹ میں اولمپک کوٹہ لینےکے ساتھ ہی ہندوستان نے اس سال ہونے والے ٹوکیو اولمپک کےلئے نو کوٹہ حاصل کرکے اپنی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

image