image
Friday, Apr 19 2019 | Time 03:58 Hrs(IST)
Entertainment

فلم ’ 2.0 ‘ اب چین میں بھی دھوم مچائے گی

ممبئی، 6 دسمبر (یو این آئی) جنوبی ہندکی فلموں کے سپراسٹار رجنی کانت اور کھلاڑی کمار اکشے کمار کی سپرہٹ فلم 2.0 اب چین میں بھی دکھائی جائے گی۔

رجنی کانت اور اکشے کمارکی فلم 2.0 باکس آفس پر سپرہٹ رہی۔
اب یہ فلم چین میں بھی جلوہ گر ہوگی اور اسے چین میں 56 ہزار اسکرین پر پیش کیا جائے گا۔


ایچ وائی میڈیا کے تعاون سے یہ فلم 56 ہزار اسکرین پر ریلیز ہوگی، جن میں سے کم از کم 47 ہزار اسکرین پر یہ تھری ڈی کی شکل میں دکھائی جائے گی۔
چین میں یہ فلم '2.0' مئی 2019 میں ریلیز ہوگی اور یہ کسی غیر ملکی زبان میں تھری ڈی کی شکل میں سب سے بڑی فلم ہوگی۔
فلم 2.0 سال 2010 میں آئی بلاک بسٹر فلم ’اینتھرن‘ کا سیکوئل ہے۔

یو این آئی۔
شا پ۔
1352
ہندی

ہندی فلموں میں سرکٹ کے نام سے مشہور ہیں ارشد وارثی

ممبئی ، 18 اپریل (یو این آئی) ارشد وارثی کی پیدائش ایک مسلم گھرانے میں 19 اپریل 1968 کو ممبئی میں ہوئی۔

گلشن

گلشن باورا: فلمی نغمہ نگاری کو نئی جہتوں سے نوازا

12 اپریل سالگرہ کے موقع پر جاری ....
ممبئی، 11 اپریل (یو این آئی) بالی وڈ میں گلشن باورا کو ایک ایسے نغمہ نگار کے طورپر یاد کیا جاتا ہے جنہوں نے اپنے جذباتی نغمات سے تقریباً تین دہائیوں تک ناظرین کو اپنا دیوانہ بنایا ۔

سچترا

سچترا سین نے بین الاقوامی سطح پر اپنی شناخت بنائی

چھ اپریل یوم ولادت کے موقع پر خصوصی پیشکش
ممبئی،5اپریل(یواین آئی)ہندوستانی سنیما میں سچترا سین کو ایک ایسی اداکارہ کے طور پر یاد کیا جاتا ہے جنہوں نے بنگلہ فلموں میں قابل تعریف اداکاری کے ساتھ ساتھ بین الاقوامی سطح پر بھی اپنی خاص شناخت قائم کی۔

این

این چندرا: سماجی پس منظر پر مبنی فلمیں بناکر ناظرین کے دلوںمیں خاص شناخت بنائی

(4 اپریل سالگرہ کے موقع پر)
ممبئی، 3 اپریل (یو این آئی) بالی ووڈ میں این چندرا کو ایک ایسے فلم ساز کے طور پر شمار کیا جاتا ہے جنہوں نے سماجی پس منظر پر مبنی فلمیں بنا کر شائقین کے درمیان اپنی خاص شناخت بنائی ہے۔

حسن

حسن اور اداکاری کی منفرد سنگم ہے جیہ پردا

(3 اپریل سالگرہ کے موقع پر جاری)
ممبئی 2 اپریل (یو این آئی) بالی ووڈ میں جیہ پردا ان چنندہ اداکاراؤں میں شمار ہوتی ہیں جن کی خوبصورتی اور اداکاری کا منفرد سنگم دیکھنے کو ملتا ہے۔

نغمہ

نغمہ نگار نہیں گلوکار بننے کی تمنا رکھتے تھے آنند بخشی

30 مارچ برسی کے موقع پر جاری
ممبئی، 29 مارچ (یواین آئی) اپنے سدا بہار گیتوں سے سامعین کو دیوانہ بنانے والے بالي ووڈ کے مشہور نغمہ نگار آنند بخشی نے تقریبا چار دہائی تک سامعین کواپنا دیوانہ بنائے رکھا لیکن بہت کم لوگوں کو معلوم ہوگا کہ وہ نغمہ نگار نہیں بلکہ گلوکار بننا چاہتے تھے۔

سلمان

سلمان ،دیپیکا کے ساتھ کام کرنا چاہتے ہیں

ممبئی،28مارچ(یواین آئی)مشہور اداکار سلمان خان ،اداکارہ دیپیکا پدوکون کے ساتھ کام کرنا چاہتے ہیں۔

لو

لو رنجن،رنبیر اور اجے کو لے کر فلم بنائیں گے

ممبئی،28مارچ(یواین آئی)مشہور ہدایت کار لو رنجن اداکار رنبیر کپور اور اجے دیوگن کو لے کر فلم بنانے والے ہیں۔

فاروق

فاروق شیخ : متوازی فلموں کے ساتھ ساتھ کمرشیل فلموں میں مخصوص شناخت بنائی

(25مارچ یوم پیدائش کے موقع پر خصوصی پیش کش)
نئی دہلی ، 24 مارچ (یواین آئی) بالی ووڈ میں فاروق شیخ ایک ایسےاداکارکےطور پر یاد کئے جاتے ہیں جنہوں نے ڈراموں اور متوازی سنیما کے ساتھ ساتھ پیشہ ورانہ سنیما میں بھی ناظرین کے درمیان اپنی مخصوص شناخت بنائی۔

بھارت

بھارت رتن شہنائی نواز استاد بسم اللہ خان

(21مارچ پیدائش کے موقع پر)
نئی دہلی، 20 اگست (یو این آئی) دُنیا بھر میں شہنائی کو شناخت دلانےاور اسے خاص و عام میں مقبول بنانے والے معروف شہنائی نواز استاد بسم اللہ خان کی پیدائش21 مارچ 1916 کو بہار کے گاؤں (دمراؤں) ضلع بکسر کے پیغمبربخش اور والدہ مٹھاں کے گھر ہوئی تھی۔

کامیڈی کنگ  کہے جانے والے محمود کو بھی کرنی پڑی جدوجہد

کامیڈی کنگ کہے جانے والے محمود کو بھی کرنی پڑی جدوجہد

ممبئی، 28 ستمبر (یو این آئی) اپنے مخصوص انداز، اسٹائل اورمزاحیہ آواز سے تقریباً پانچ دہائیوں تک ہنسانے اور گدگدانے والےمحمود نے فلم انڈسٹری میں کنگ آف کامیڈی کا درجہ حاصل کیا لیکن انہیں اس کے لئے کافی مشقت کرنا پڑی اوریہاں تک سننا پڑا کہ نہ تو وہ اداکاری کرسکتے ہیں اور نہ ہی کبھی اداکار بن سکتے ہیں۔

بھارت رتن شہنائی نواز استاد بسم اللہ خان

بھارت رتن شہنائی نواز استاد بسم اللہ خان

نئی دہلی، 20 اگست (یو این آئی) دُنیا بھر میں شہنائی کو شناخت دلانےاور اسے خاص و عام میں مقبول بنانے والے معروف شہنائی نواز استاد بسم اللہ خان کی پیدائش21 مارچ 1916 کو بہار کے گاؤں (دمراؤں) ضلع بکسر کے پیغمبربخش اور والدہ مٹھاں کے گھر ہوئی تھی۔ بسم اللہ خان کے آباؤ اجداد بھوج پور ضلع بہار کے شاہی دربار میں نقار خانہ میں ملازم بھی تھے۔ان کے والد پیغمبر بخش خان مہاراجہ جودھ پور کے دربار میں شہنائی نواز تھے۔اس سے پہلے ان کےپردادا استاد سالار حسین خان اور دادا رسول بخش خان بھی دمراؤں کے شاہی دربار میں گاتےتھے۔ ماں باپ نے اُن کانام امیرالدین خان رکھا تھا لیکن دادا نے امیرخان کو بسم اللہ میں بدل دیا اور ہاتھ میں شہنائی تھما دی۔ چونکہ موسیقی انہیں میراث میں ملی تھی اسی لیے بچپن سے ہی موسیقی میں دلچسپی رکھنے والے بسم اللہ خان نے اپنے ماموں علی بحش سےشہنائی نوازی کی تعلیم حاصل کی اور پھر بعد میں بسم اللہ خان انہی کے ساتھ کاشی کے وشوناتھ مندر میں شہنائی بجانےلگے۔چار یا پانچ برس کی عمر میں بنارس آ گئے تھے۔

image