image
Friday, Feb 23 2024 | Time 02:55 Hrs(IST)
Science Technology

امریکہ نے ہندوستانی قونصلیٹ جنرل میں توڑ پھوڑ کی مذمت کی

نئی دہلی، 21 مارچ (یو این آئی) امریکہ نے سان فرانسسکو میں ہندوستان کے قونصلیٹ جنرل میں خالصتانی حامیوں کی طرف سے توڑ پھوڑ کو 'ناقابل قبول' قرار دیتے ہوئے کہا کہ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ سیکورٹی سروس اس واقعہ کی تحقیقات کے لیے مقامی حکام کے ساتھ مل کر کام کر رہی ہے۔
اپنی روزانہ کی بریفنگ میں توڑ پھوڑ کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں، وائٹ ہاؤس کے ترجمان جان کربی نے کہا، "ہم یقینی طور پر اس توڑ پھوڑ کی مذمت کرتے ہیں۔ یہ بالکل 'ناقابل قبول' ہے۔ وزارت خارجہ کی ڈپلومیٹک سیکیورٹی سروس مقامی حکام کے ساتھ معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔
ترجمان نے مزید کہا، "میں سان فرانسسکو پولیس کے لیے بات نہیں کر سکتا، لیکن میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ ڈپلومیٹک سیکیورٹی سروس مقامی حکام کے ساتھ مناسب طریقے سے تفتیش کے لیے کام کر رہی ہے۔ بظاہر، اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ انفراسٹرکچر کے نقطہ نظر سے نقصان کی تلافی کے لیے کام کر رہا ہے۔ لیکن یہ ناقابل قبول ہے۔"
وائٹ ہاؤس کے قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان نے بھی ایک ٹویٹ میں تخریب کاری کی مذمت کی۔ انہوں نے کہا، ’’ہم سان فرانسسکو میں ہندوستانی قونصل خانے کے خلاف تشدد کی کارروائیوں کی مذمت کرتے ہیں۔ ہم ان سہولیات اور ان کے اندر کام کرنے والے سفارت کاروں کی حفاظت اور حفاظت کے لیے پرعزم ہیں۔ محکمہ خارجہ اس معاملے میں اگلے اقدامات پر مقامی قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ رابطے میں ہے۔"
ہندوستان نے سان فرانسسکو میں اپنے قونصلیٹ جنرل میں توڑ پھوڑ کے واقعات پر امریکی سفارت خانے کے انچارج کے ساتھ سخت احتجاج درج کرایا ہے۔
وزارت خارجہ کے مطابق امریکی سفارتخانے کے افسر انچارج سے ملاقات میں واضح طور پر کہا گیا کہ سفارتی نمائندگی کی حفاظت اور تحفظ امریکی حکومت کی بنیادی ذمہ داری ہے۔ یہ بھی کہا گیا کہ اس معاملے میں ایسے اقدامات کیے جائیں تاکہ آئندہ ایسا کوئی واقعہ پیش نہ آئے۔
وزارت خارجہ کے مطابق واشنگٹن میں ہندوستانی سفارت خانے نے امریکی محکمہ خارجہ کو ہندوستان کے ان خدشات سے آگاہ کیا اور ان سے کہا کہ وہ اپنی ذمہ داری پوری کریں۔
کل سان فرانسسکو میں خالصتان کے حامی لوگوں کے ایک بنیاد پرست گروپ نے ہندوستانی قونصلیٹ جنرل کی عمارت پر حملہ کیا اور توڑ پھوڑ کی۔
لندن میں ہندوستانی ہائی کمیشن میں توڑ پھوڑ اور عمارت کی پہلی منزل سے ترنگا اتارنے کے الزام میں ایک شخص کو گرفتار کیا گیا ہے۔
مقامی میڈیا نے رپورٹ کیا کہ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیوز میں ایک پرتشدد ہجوم کو 'خالصتان' کے پیلے بینرز لہراتے ہوئے اور ایک شخص کو عمارت کی پہلی منزل کی بالکونی سے ہندوستانی پرچم اتارتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ کچھ خالصتانی گروپوں کے حملے میں دو سیکورٹی گارڈز زخمی ہوئے۔
وزارت خارجہ کے ایک سرکاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان نے امریکی حکومت کو سفارتی نمائندگی کی حفاظت اور حفاظت کرنے اور اس طرح کے واقعات کی تکرار کو روکنے کے لیے مناسب اقدامات کرنے کی اس کی بنیادی ذمہ داری بھی یاد دلائی۔
سان فرانسسکو میں، مشتعل خالصتانی حامیوں کے ایک بڑے گروپ نے ہندوستانی قونصل خانے کی عمارت میں توڑ پھوڑ کی جب ہندوستانی عملے نے وہاں رکھے خالصتانی جھنڈے ہٹائے۔ سوشل میڈیا پر نظر آنے والے واقعے کی ویڈیوز کے مطابق انہوں نے دیواروں پر ہندمخالف گرافٹی پینٹ کی اور دروازے اور کھڑکیاں توڑنے کی بھی کوشش کی۔
واقعے کے ایک دن بعد، خالصتانی شرپسندوں نے لندن میں ہندوستانی ہائی کمیشن میں توڑ پھوڑ کی اور ہندوستانی قومی پرچم کو ہٹا دیا اور اس کی جگہ اپنا خالصتانی پرچم لگانے کی کوشش کی۔ ہندوستان نے اس معاملے میں برطانیہ سے سخت احتجاج کیا ہے۔
قابل ذکر ہے کہ ہندوستانی پنجاب میں خالصتانی حامی امرت پال سنگھ کی گرفتاری کے لیے پولیس کی کارروائی کے درمیان خالصتانی حامیوں نے توڑ پھوڑ کی۔ پولیس کے مطابق امرت پال مفرور ہے جبکہ اس کے رشتہ داروں اور حامیوں نے پولیس پر اسے اپنی تحویل میں رکھنے کا الزام لگایا ہے۔
یو این آئی۔ ع ا۔
خاص خبریں
وزیراعظم نے نوساری میں 47,000 کروڑ روپے کے کئی ترقیاتی پروجیکٹوں کو قوم کے نام وقف کیا

وزیراعظم نے نوساری میں 47,000 کروڑ روپے کے کئی ترقیاتی پروجیکٹوں کو قوم کے نام وقف کیا

نوساری، 22 فروری (یو این آئی) وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعرات کو گجرات کے نوساری میں 47,000 کروڑ روپے سے زیادہ کی لاگت والے کئی ترقیاتی پروجیکٹوں کو قوم کے نام وقف کیا اور سنگ بنیاد رکھا۔

...مزید دیکھیں
کسان ہمارے ان داتا، حکومت ان سے مسائل پر بات کرنے کے لیے ہمیشہ تیار ہے: ٹھاکر

کسان ہمارے ان داتا، حکومت ان سے مسائل پر بات کرنے کے لیے ہمیشہ تیار ہے: ٹھاکر

نئی دہلی، 22 فروری (یو این آئی) کسانوں کو 'انا داتا' اور 'بھائی' کہتے ہوئے مرکزی حکومت نے جمعرات کو کہا کہ وہ ان کسانوں سے بات کرنے کے لیے تیار ہے جو فصلوں کی کم از کم امدادی قیمت (ایم ایس پی) کو لے کر احتجاج کر رہے ہیں۔

...مزید دیکھیں
گجرات سے شروع ہونے  والا امول دودھ فیڈریشن برگد کا درخت بن کر پوری دنیا میں پھیل گیا ہے :مودی

گجرات سے شروع ہونے والا امول دودھ فیڈریشن برگد کا درخت بن کر پوری دنیا میں پھیل گیا ہے :مودی

احمدآباد، 22 فروری (یو این آئی) وزیراعظم نریندر مودی نے کوآپریٹیو دودھ ماکیٹنگ فیڈریشن کی گولڈن جوبلی کے موقع پر ایک عوامی جلسے کو خطاب کرتے ہوئے آج کہا کہ گجرات کے دیہاتوں نے 50 سال پہلے جو پودا لگایا تھا وہ آج برگد کا ایک بڑا درخت بن چکا ہے اور آج برگد کے اس بڑے درخت کی شاخیں ملک و بیرون ملک پھیل چکی ہیں۔

...مزید دیکھیں
کسانوں اور فوجیوں کو نظر انداز کرکے حکومت جمہوریت کا قتل کر رہی ہے: راہل گاندھی

کسانوں اور فوجیوں کو نظر انداز کرکے حکومت جمہوریت کا قتل کر رہی ہے: راہل گاندھی

نئی دہلی، 22 فروری (یواین آئی) کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے مرکزی حکومت پر کسانوں اور فوجیوں کو نظر انداز کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ مودی حکومت میں لوگوں کی بات نہیں سنی جارہی ہے اور عوام کی آواز کو دبا کر جمہوریت کا قتل کیا جارہا ہے۔

...مزید دیکھیں
دہلی حکومت سڑکوں کو بہتر بنانے کے لیے 'مشن موڈ' میں کام کر رہی ہے: آتشی

دہلی حکومت سڑکوں کو بہتر بنانے کے لیے 'مشن موڈ' میں کام کر رہی ہے: آتشی

نئی دہلی، 22 فروری (یو این آئی) دہلی کے تعمیرات عامہ کے وزیر آتشی نے جمعرات کو کہا کہ کیجریوال حکومت یہاں کی سڑکوں کو مسافروں کے لیے بہتر، خوبصورت اور محفوظ بنانے کے لیے مشن موڈ میں کام کر رہی ہے۔

...مزید دیکھیں
پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے سترہویں لوک سبھا کے دوران 138 رپورٹیں پیش کیں

پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے سترہویں لوک سبھا کے دوران 138 رپورٹیں پیش کیں

نئی دہلی، 22 فروری (یواین آئی) سترہویں لوک سبھا کے دوران پبلک اکاؤنٹس کمیٹی (پی اے سی) نے 138 معاملے کی چھان بین کی اور اتنی ہی رپورٹیں پیش کیں۔

...مزید دیکھیں
مولانا آزاد نے اردو صحافت کو زمانے کی رفتار سے آنکھیں چار کرنے کا سلیقہ سکھایا:معصوم مرادآبادی

مولانا آزاد نے اردو صحافت کو زمانے کی رفتار سے آنکھیں چار کرنے کا سلیقہ سکھایا:معصوم مرادآبادی

مانو لکھنؤکیمپس میں مولانا آزاد کی صحافتی خدمات کے موضو ع پر توسیعی خطبہ کا انعقاد
لکھنؤ،22 فروری (یو این آئی) مولانا آزاد نے اردوصحافت کو اس معراج پر پہنچایا کہ وہ دیگر ترقی یافتہ زبانوں کی صحافت کے ہم پلہ قرارپائی۔

...مزید دیکھیں
image