image
Friday, Jul 10 2020 | Time 18:00 Hrs(IST)
  • آیوشمان بھارت – ہیلتھ اینڈ ویلنیس سینٹر سبھی کے لئے جامع بنیادی صحت خدمات فراہم کرارہے ہیں
  • مشتاق احمد ہاکی انڈیا کے صدر کے عہدے سے مستعفیٰ
  • ہرش وردھن کی گواسکر کو مبارکباد
  • پہلے ٹیسٹ میں سوشل ڈسٹینسنگ پر عمل نہیں
  • بی سی سی آئی کیا راہل جوہری کا استعفیٰ منظور
  • ایس ٹی ایف نے انعامی بدمعاش کو کیا گرفتار
  • ہریانہ میں کورونا کے 372معاملے، مجموعی تعداد 19741ہوئی، 287اموات
  • اقوام متحدہ، آئی سی آر سی نے یوکرین کو انسانی بنیاد پر امداد فراہم کی
  • شیئر بازار میں گراوٹ ، سنسیکس میں 143 پوائنٹس کی کمی
  • این 95 ماسک کو دوبارہ استعمال کے لئے اوزون پر مبنی آلہ لانچ
  • گیان واپی اور متھراکی عیدگاہ معاملہ:سپریم کورٹ میں آج بحث نہیں ہوسکی، سماعت چارہفتے کیلئے ملتوی، آئین کی بالادستی قائم رکھنا اور اس کا تحفظ حکومت اور عدالت کا کام : مولاناارشدمدنی
  • یو پی بورڈ کے نصاب میں ہوگی تخفیف:ڈاکٹر شرما
  • نالندہ میں لاپتہ بچی کی لاش برآمد
  • ڈالر کے مقابلے روپیہ 21 پیسے کمزور
  • مونگیر میں پولیس مخبری کے الزام میں دو دیہی باشندے کا قتل
Entertainment » Celebrity Brithday

ویلن سے ہیرو بنے ونود کھنہ

ویلن سے ہیرو بنے ونود کھنہ

یوم ولادت 6 اکتوبر کے موقع پر خصوصی پیش کش
ممبئی، 5 اکتوبر (یو این آئی) بطور ویلن اپنے کیئرئر کا آغاز کرنے والے اور پھر فلم انڈسٹری میں بطور ہیرو شہرت کی بلندیوں تک پہنچنے والے صدابہار اداکار ونود کھنہ نے اپنی اداکاری سے مداحوں کے درمیاں اپنے انمٹ نقوش چھوڑے ہیں۔

چھ اکتوبر 1946 میں پاکستان کے پیشاور میں پیدا ہوئے ونود کھنہ نے گریجویشن کی تعلیم ممبئی سے پوری کی۔
اسی دوران انہیں ایک پارٹی کے دوران ڈائریکٹر پروڈیوسر سنیل دت سے ملنے کا موقع ملا۔
سنیل دت ان دنوں اپنی فلم من کی بات کےلئے نئے چہرے کی تلاش میں تھے۔
انہوں نے فلم میں ونود کھنہ سے بطور معاون ہیرو کام کرنے کی پیش کش کی جسے ونود کھنہ نے بخوشی منظور کرلیا۔

اس فیصلے کے بعد گھر پہنچنے پر ونود کھنہ کو اپنے والد سے کافی ڈانٹ بھی سننی پڑی۔
یہاں تک کہ ونود کھنہ نے جب اپنے والد سے فلم میں کام کرنے کے بارے میں کہا تو ان کے والد نے ان پر بندوق تان لی اور کہا اگر تم نے فلموں میں کام کرنا شروع کیا تو میں تمہیں گولی ماردوں گا۔
بعد میں ونود کھنہ کی ماں کے سمجھانے پر ان کے والد نے ونود کھنہ کو فلموں میں دو سال تک کام کرنے کی اجازت دے دی اور کہا اگر فلم انڈسٹری میں کامیاب نہیں ہوئے تو گھر کے کام کاج میں ہاتھ بٹانا ہوگا۔

سال 1968 میں ریلیز فلم من کی بات باکس آف پر ہٹ رہی۔
فلم کی کامیابی کے بعد ونود کھنہ کو آن ملو سجنا، میرا گاؤں میرا دیش، سچا جھوٹا، جیسی فلموں میں ویلن کا رول نبھانے کا موقع ملا لیکن ان فلموں کی کامیابی کے باوجود ونود کھنہ کو کوئی خاص فائدہ نہیں ہوا۔

جاری ۔
یو این آئی۔
شا پ۔
1021

image