image
Friday, Nov 15 2019 | Time 20:29 Hrs(IST)
  • سی آر پی ایف نکسلیوں کے خلاف فیصلہ کن مہم چلائے : امت شاہ
  • مغربی مدنی پور میں بی جے پی ورکر کی لاش درخت سے لٹکی ہوئی برآمد
  • دو معاملوں میں رکن اسمبلی اننت سنگھ کے خلاف پیشی وارنٹ
  • خصوصی مہم میں تین خونخوار سمیت 97 بدمعاش گرفتار
  • شیوسینا،کانگریس ،این سی پی کے درمیان یکساں قلیل ترین معاہدہ طے،حکومت سازی کی کوشش جلد
  • پاکوڑ میں مختلف گاڑیوں سے پانچ لاکھ سے ز ائد نقدضبط
  • تیراکی: انگلش چینل تیر کر پار کرنے والے پہلے ہندوستانی تھے مہر سین
  • شیو کمار کی ضمانت کے خلاف ای ڈی کی اپیل مسترد
  • بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ ہماری سمجھ سے بالاتر:مولاناارشد مدنی
  • یوپی کے کئی شہروں میں جلد میٹرو کی سہولت : یوگی
National

۔۔۔۔۔۔۔

مسٹر جیلانی نے کہا کہ فیصلے میں جہاں تک ماخذات کا تعلق ہے تو وہ اطمینان بخش نہیں۔
مثلاً مسجد کی 1528 میں میر باقی کے ہاتھوں تعمیر کو تو مانا گیا ہے لیکن تین گنبدوں والی مسجد کی تعمیر کے ریکارڈ میں اگر نماز کا ذکر نہیں تو اس کا نوٹس کیوں لیا گیا جبکہ کیا وہاں پوجا ہونے کا بھی کوئی ذکر موجودنہیں ! اس طرح یہ استفسار کیا جا سکتا ہے کہ جس دستاویز کو فریق ثانی کے آستھا پر یقین کے لئے استعمال کیا گیا ہے اسے مسجد کا مقدمہ لڑنے والوں کے لئے کیوں ضروری نہیں سمجھا گیا!!
کانفرنس کو دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا جن کامجموعی تاثر یہ تھا کہ عدالت کا دروازہ انصاف کے لئے کھٹکھٹایا گیا تھا لیکن ایک غیر اطمینان بخش فیصلہ سنایا گیا ہے جو مبنی بر حقیقیت نہیں بلکہ اس فیصلے میں ایسے دستاویزات اور دوسری لوازمات کا پاس رکھا گیا ہے جن سے صرف ایک فریق کی آستھا پوری ہوتی ہے۔
اس طرح ایک متنازعہ باب بند کر دیا گیا۔
خاص خبریں
ہائی کورٹ نے چدمبرم کی ضمانت کی عرضی مسترد کردی

ہائی کورٹ نے چدمبرم کی ضمانت کی عرضی مسترد کردی

نئی دہلی ، 15 نومبر (یو این آئی) دہلی ہائی کورٹ نے آئی این ایکس میڈیا سے متعلق بے ضابطگیوں کے معاملے میں تہاڑ جیل میں بند سابق مرکزی وزیر اور کانگریس کے رہنما پی چدمبرم کی درخواست ضمانت جمعہ کو خارج کردی۔

...مزید دیکھیں
بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ ہماری سمجھ سے بالاتر:مولاناارشد مدنی

بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ ہماری سمجھ سے بالاتر:مولاناارشد مدنی

نئی دہلی،15نومبر(یو این آئی) بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ کوسمجھ سے بالاتر قرار دیتے ہوئے جمعیۃعلماء ہند کے صدر مولانا ارشدمدنی نے بابری مسجد قانون اور عدل وانصاف کی نظرمیں ایک مسجد تھی اور آج بھی شرعی لحاظ سے مسجد ہے اور قیامت تک مسجد ہی رہے گی، چاہے اسے کوئی بھی شکل اور نام دیدیا جائے۔

...مزید دیکھیں
وزیر دفاع نے بملا میں اگلی فوجی چوکیوں کا دورہ کیا

وزیر دفاع نے بملا میں اگلی فوجی چوکیوں کا دورہ کیا

ایٹا نگر، 15نومبر (یو این آئی) اروناچل پردیش کے دو دنوں کے دورہ پر آئے وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے جمعہ کو ہند۔

...مزید دیکھیں
آلودگی معاملے میں چار ریاستوں کے چیف سکریٹری  سپریم کورٹ میں طلب

آلودگی معاملے میں چار ریاستوں کے چیف سکریٹری سپریم کورٹ میں طلب

نئی دہلی ، 15 نومبر (یو این آئی) آلودگی روکنے میں ناکامی پر سپریم کورٹ نے پنجاب ، ہریانہ ، اتر پردیش اور دہلی کے چیف سکریٹریوں کو جمعہ کو طلب کیا۔

...مزید دیکھیں
وزیر اعظم نے اجودھیا فیصلے پر جسٹس گوگوئی کو کوئی  خط نہیں لکھا: حکومت

وزیر اعظم نے اجودھیا فیصلے پر جسٹس گوگوئی کو کوئی خط نہیں لکھا: حکومت

نئی دہلی، 15 نومبر (یو این آئی) حکومت نے آج واضح کیا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے اجودھیا میں رام مندر سے متعلق معاملے میں فیصلے کے بعد سپریم کورٹ کے چیف جسٹس جسٹس رنجن گوگوئی کو کوئی خط نہیں لکھا۔

...مزید دیکھیں
شیوکمار کی ضمانت کے خلاف ای ڈی کی اپیل خارج

شیوکمار کی ضمانت کے خلاف ای ڈی کی اپیل خارج

نئی دہلی،15نومبر(یواین آئی)سپریم کورٹ نے منی لانڈرنگ معاملے میں کانگریس لیڈر ڈی کے شیوکمار کو ضمانت دئےجانے کے خلاف انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی)کی اپیل جمعہ کو خارج کردی۔

...مزید دیکھیں
کشمیرمیں اہم رہنماؤں کونظربند رکھنے کی وجہ بتائے  حکومت :کانگریس

کشمیرمیں اہم رہنماؤں کونظربند رکھنے کی وجہ بتائے حکومت :کانگریس

نئی دہلی ،15نومبر(یواین آئی)کانگریس نے کہاہے کہ جموں کشمیر میں سب کچھ ٹھیک ہونے کے بارے میں پوری دنیا میں شور مچارہی مودی حکومت کوبتانا چاہیے کہ کشمیر کو ملک کا اٹوٹ حصہ بنائے رکھنے میں تعاون کرنے والے مرکزی دھارے کے رہنماؤں کو حراست میں کس وجہ سے رکھاگیاہے ۔

...مزید دیکھیں
بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ ہماری سمجھ سے بالاتر:مولاناارشد مدنی

بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ ہماری سمجھ سے بالاتر:مولاناارشد مدنی

15 Nov 2019 | 8:27 PM

نئی دہلی،15نومبر(یو این آئی) بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ کوسمجھ سے بالاتر قرار دیتے ہوئے جمعیۃعلماء ہند کے صدر مولانا ارشدمدنی نے بابری مسجد قانون اور عدل وانصاف کی نظرمیں ایک مسجد تھی اور آج بھی شرعی لحاظ سے مسجد ہے اور قیامت تک مسجد ہی رہے گی، چاہے اسے کوئی بھی شکل اور نام دیدیا جائے۔یہ بات انہوں نے مجلس عاملہ کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔

image